اسلام آباد: ہائی کورٹ نے ججز نظربندی کیس میں ملزم پرویز مشرف کی ضمانت منظور کرنے کا تحریری فیصلہ جاری کر دیا ہے، جس کے مطابق یہ ثابت ہوناباقی ہے کہ ججز کی غیر قانونی نظربندی کے احکامات پرویز مشرف نے جاری کئے۔

 اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس ریاض احمد خان اور جسٹس نور الحق قریشی کے دستخط سے جاری فیصلے میں کہا گیا ہے کہ ججز نظربندی کیس میں ملزم کے خلاف دہشت گردی ایکٹ کی دفعات کا اضافہ ہائی کورٹ کے جج کے حکم پر ہوا۔ پرویز مشرف کے خلاف ججز کی نظربندی اور دہشت گردی الزامات کا ریکارڈ موجود نہیں، صرف وکلاء کے بیانات ہیں جنہیں بطور شواہد استعمال نہیں کیا جا سکتا۔

 ایف آئی آر کے متن کے مطابق کہا جا سکتا ہے کہ صدر پاکستان نے غیر آئینی اقدام کیا۔ فیصلے میں کہاگیا ہے کہ صرف ملزم کے اشتہاری رہنے کے باعث ضمانت مسترد نہیں کی جا سکتی، ملزم کے اشتہاری رہنے سے اسے حاصل تمام حقوق ختم نہیں ہو جاتے۔

وزیر اعظم نوازشریف نے کہا ہے کہ جمہوریت میں ہی پاکستان کی بقاہے ،قومی اسمبلی سے خطاب کرتے ہو ئے ان کا کہنا ہے کہملک میں آمریت اور جمہوریت کے درمیان کشمکش رہی ہے،سیاسی جماعتوں اور دانشوروں نے جمہوریت کاپرچم سرنگوں نہیں ہونے دیا۔12 اکتوبر کو بھی شب خون مارا گیا جبکہ3نومبر کو بھی غیر آئینی اقدام کیا جس میں عدلیہ کے ججوں کی غیر قانونی حکم نامے کے ذریعے کام سے روک دیا گیا تاہم اب پر ویز مشرف کو اپنے اس عمل کا جواب دینا ہے اور آئین شکنی کا جواب دہ ہونا ہوگا
 
پر ویز مشرف کے خلاف آرٹیکل6کے تحت غداری کا مقدمہ چلائیں گے اس سلسلے میں اٹارنی جنرل آج عدالت میں حکومتی موقف سے آگاہ کریں گے۔وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ آج ہم منتخب ایوان میں موجود ہیں اور چاروں صوبوں میں بھی نمائندہ حکومتیں آ چکی ہیں،وزیر اعظم نے ایوان میں اپنے خطاب میں مزید کہا کہ پاکستان جمہوریت کے ذریعے وجود میں آیا یہاں انتقال اقتدار کا عمل جا ری اور ساری رہے گا 
 
پرویز مشرف کے خلاف غداری کا مقدمہ چلانے کیلئے دائر درخواست کی سماعت کے دوران اٹارنی جنرل پاکستان نے وفاقی حکومت کا موقف سپریم کورٹ میں پیش کر دیاہے۔ذرائع کے مطابق اٹارنی جنرل کا اس موقع پر کہنا ہے کہ آرٹیکل 6 کی خلاف
ورزی کے مرتکب شخص کو قانون کے کٹہرے میں لایا جائیگا،اس سلسلے میں پارلیمنٹ کی قرارداد بھی موجود ہے ،حکومت قانون کی حکمرانی کے اعلیٰ معیار پر یقین رکھتی ہے،
 
اٹارانی جنرل کا کہنا ہے کہ عوام، عدالت کو یقین دہانی کراتے ہیں کہ قانون کے مطابق کارروائی کرینگے اور مشاورت کے عمل کیلئے پولیٹیکل اسپیس دی جائے۔

login with social account

5.png

Images of Kids

Events Gallery

Currency Rate

/images/banners/muzainirate.jpg

 

As of Fri, 15 Dec 2017 19:00:11 GMT

1000 PKR = 2.758 KWD
1 KWD = 362.529 PKR

Al Muzaini Exchange Company

Go to top