Community News

تحریک کشمیر گلف کے تحت سابق امیر جماعت اسلامی مرحوم و مغفور سید منور حسن صاحب کے حوالے سے آن لائن تعزیتی اجلاس کا انعقاد کیا گیا۔

تحریک کشمیر گلف کی طرف سے ڈاکٹر احمد جاوید نے میزبانی کے فرائض سر انجام دئیے۔ جس میں پاکستان، خلیجی ممالک اور یو کے سے مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والی معروف شخصیات سمیت کثیر تعداد نے شرکت کی۔

تلاوت قرآن پاک سے پروگرام کا باقاعدہ آغاز کیا گیا۔ قاری عبداللہ فاروق صاحب نے قرآن پاک کی تلاوت کی اور اردو ترجمہ انکے والد گرامی نے کیا۔ اسکے بعد محترم جناب منور حسن صاحب کی تحریکی خدمات کے حوالے سے ایک وڈیو دکھائی گئی جس میں انکو خراج تحسین پیش کیا گیا۔

اسکے بعد پروگرام میں شریک مہمانان گرامی نے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے سید صاحب کی خدمات کو خراج تحسین پیش کیا۔

معزز مہمانوں میں (صدر تحریک کشمیر یورپ) محمد غالب صاحب،
(کویت کی جانی مانی سماجی اور کاروباری شخصیت ) حافظ محمد شبیر صاحب،
(چیئرمین کویت پاکستان فرینڈ شپ ایسوسی ایشن ) رانا محمد اعجاز صاحب،
(ہیڈ ملٹی میڈیا اردو پوائنٹ اور مصروف صحافی) شاہد نزیر چوھدری صاحب،
(سابق صدر اسلامک ایجوکیشن کمیٹی کویت) اخلاق احمد صاحب،
(صدر تحریک کشمیر یوکے) فہیم کیانی صاحب، (الخدمت فاؤنڈیشن اسلام آباد کے ذمہ دار اور کالم نگار) شہزاد عباسی صاحب،
(پاکستان انٹرنیشنل سکول قطر کے مدرس)ضیا الرحمن صاحب،
(مدرس لجنہ تعریف الاسلامیہ و اسلامک ایجوکیشن کویت) ملک ارشاد صاحب،
اسکے علاوہ قاسم رضا صاحب، شکیل مرتضی صاحب، شاکر شفیع صاحب اور عبدالعزیز صاحب نے بھی اظہار تعزیت کیا۔

شرکاء کا کہنا تھا کہ سید منور حسن رح ایک عہد ساز شخصیت اور جہد مسلسل کا نام ہے۔ انہوں نے بڑی بے باک اور نظریاتی زندگی گزاری۔ وہ تحریک اسلامی کے زبردست داعی تھے۔ مولانا مودودی رح کے قلم نے انہیں اس طرح اپنا بنا لیا کہ پھر انہوں نے آنکھ اٹھا کر کسی اور طرف نہیں دیکھا۔ اسلامی نظام کے نفاذ بذریعہ انقلاب ان کی زندگی کا اول و آخر مقصد تھا۔ دوست و مخالفین سب انکی سچائی اور صاف گوئی کے معترف تھے۔ وہ بہت زبردست اور شائستہ مقرر تھے، انگریزی زبان پر بڑی دسترس تھی، بولتے تو سماں باندھ دیتے، آج کے سیاسی دور میں اس اسلوب کا مقرر بہت کم نظر آتا ہے۔ وہ پروفیسر خورشید احمد کی علمی روایت، میاں طفیل محمد کی للہٰیت اور قاضی حسین احمد کی بے تابی کے امین تھے۔ مقررین کا کہنا تھا کہ ایسے لوگ ہمیں اقتدار کے ایوانوں تک پہنچانے چاہیں تاکہ پاکستان میں ایماندار طبقہ اوپر آسکے اور پاکستان اپنی اصل اساس پر گامزن ہو سکے۔
تقریب کے آخر میں انکی مغفرت اور درجات کی بلندی کیلئے دعا کی گئی اور تقریب اپنے اختتام کو پہنچی۔

Insaaf Welfare Society Kuwait observed and organised Quaid e Azam Muhammad Ali Jinnah day on 10th January 2020, under the patronage of Embassy of Pakistan in Kuwait.

Kuwait: Insaaf Welfare Society Kuwait under the patronage of Embassy of Pakistan in Kuwait organised Quid e Azam Muhammad Ali Jinnah day on 10th January 2020 at Al Rigai Hall, Al Rigai Kuwait. In first segment of the program sheilds and certificates presented to the members. Syed Peer Amjad Hussain in his speech appreciated the efforts exerted by the members during worldwide intra party elections of PTI and ensured his full cooperation to the members. The second segment of Quaid day was commenced with the recitation of Quran by stage Secretary Mr. Syed Sadaqat Ali Tirmazi, followed by national anthems of Kuwait and Pakistan. In the opening speech Vice President PTI Kuwait Chapter Mr. Malik Tabasum Javed welcomed the guests and paid tribute to Quid e Azam Muhammad Ali Jinnah. He also thanked the honourable guest of Honour Federal Minister of State for State and Frontier Region (SAFRON) & Minister of Narcotics Control, Government of Pakistan Shaharyaar Khan Afridi, who arrived in Kuwait to attend the program organised on Quid Day. His speech was followed by speeches by other guest speakers, where each of the speaker paid tribute to the Father of the nation. National songs were sung by different singers during the program. Syed Peer Amjad Hussain the President PTI Kuwait chapter during his speech highlighted and brought in the notice of honourable minister and His excellency, the issues of Pakistani community and expressed his expectations that the current government of PTI will address and bring to the resolve in sha Allah. His excellency Syed Sajjad Haider also paid tribute in his speech to Quid e Azam Muhammad Ali Jinnah. He also offered his full cooperation to the President PTI Kuwait chapter Syed Peer Amjad Hussain in resolving the issues of Pakistanis living in Kuwait. Guest of Honour the Honourable Minister Shahryaar Khan Afridi in his speech endorsed the Quid’s two nations theory. In his speech he prayed for the prosperity of the state of Kuwait. He ensured that current government of Pakistan will take all necessary measures to resolve the issues of Pakistanis residing in Kuwait. He retreated to Pakistanis living in Kuwait to channel the transfer of their funds through legal banking channels. The program was concluded with the presentation of sheilds to Honourable minister and to His excellency the ambassador of Pakistan to Kuwait.

انصاف ویلفیئر سوسائٹی کویت نے سفارت خانہ پاکستان کی زیرِ سرپرستی بانیء پاکستان قائدِ اعظم محمد علی جناحؒ کا 143 واں یومِ ولادت انتہائی جوش و خروش سے منایا
وفاقی وزیر برائے انسدادِ منشیات شہریار خان آفریدی نے اسپیشل گیسٹ آف آنر اور سفیرِ پاکستان برائے کویت سید سجاد حیدر نے بطور مہمانِ خصوصی شرکت کی . پاکستانی کمیونٹی کی دیگر تنظیمات کے صدور اور افراد کی کثیر تعداد میں شرکت
پیر امجد حسین (صدر انصاف ویلفیئر سوسائٹی کویت)بابائے قوم کو خراجِ تحسین پیش کیا. اور کویت میں پاکستانی کمیونٹی کے مسائل کو اجاگر کیا اور وفاقی وزیر اور سفیرِ پاکستان کو ان کے حل کے لئے درخواست کی
ملک تبسم جاوید (نائب صدر انصاف ویلفیئر سوسائٹی کویت)نے وفاقی وزیر، سفیرِ پاکستان سمیت تمام معزز مہمانوں کا خوش آمدید کہا اور اُن کا شکریہ ادا کیا
مورخہ 10 جنوری 2020 بروز جمعہ منطقہ الرقعی کویت میں انصاف ویلفیئر سوسائٹی کویت کے زیرِ انصرام اور سفارت خانہ اسلامی جمہوریہ پاکستان کی زیرِ سرپرستی بانیء پاکستان قائدِ اعظم محمد علی جناحؒ کے143 ویں یومِ ولادت کے سلسلے میں ایک عظیم الشان اور فقید المثال پروگرام کا انعقاد کیا گیا. جس میں وفاقی وزیر برائے انسدادِ منشیات شہر یارخان نے بطور گیسٹ آف آنر خصوصی طور پر شرکت کی. سفیرِ پاکستان پروگرام کے مہمانِ خصوصی تھے. اُن کے علاوہ پاکستانی کمیونٹی اور انصاف ویلفیئر سوسائٹی کویت کی کثیر تعداد میں شرکت کی. پروگرام کے پہلے حصے میں وفاقی وزیر شہر یار خان آفریدی، پیر امجد حسین، ملک تبسم جاوید،اور شہزادالرحمن بٹ کے دستِ مبارک سے انصاف ویلفیئر سوسائٹی کویت کے کارکنان اور نمائندگان کو اُن کی بہترین کارکردگی اور خدمات کے اعتراف میں سرٹیفیکیٹس اور شیلڈز پیش کی گئیں. پیر امجد حسین نے تمام کارکنان کی خدمات پر اُن کا شکریہ ادا کیا. اور مستقبل میں بھی اسی جاں فشانی اور محنت سےکام کرنے کی تلقین کی اور اپنے مکمل تعاون کی یقین دہانی کروائی. پروگرام کے پہلے حصے کی نظامت جنرل سیکرٹری انصاف ویلفیئر سوسائٹی کویت محمد ریاض انجم نے کی.
یوم قائدِ کے حوالے سے پروگرام کی نظامت سابق جنرل سیکرٹری انصاف ویلفیئر سوسائٹی کویت سید صداقت علی ترمذی نے کی. پروگرام کا آغاز قاری عبدالرحمن نےتلاوت قرآن سے کیااور محمد اعجاز مغل نےہدیہء نعت پیش کیا . اس کے بعد کویت و پاکستانی کے قومی ترانے پیش کئے گے جن کے اختتام پر ہال پاکستان زندہ باد کے نعروں سے گونج اٹھا.ملک تبسم جاوید نائب صدر انصاف ویلفیئر سوسائٹی کویت نے اپنے خطبہ استقبالیہ میں گیسٹ آف آنرشہریار خان آفریدی، مہمانِ خصوصی سفیرِ پاکستان سید سجاد حیدر، دیگر افسران، تنظیموں کے صدور، اور میڈیا سمیت کمیونٹی کے تمام نمائندگان اور شرکائے پروگرام کو خوش آمدید کہا اور اُن کی تشریف آوری پر اُن کا شکریہ ادا کیا. پیر امجد حسین صدر انصاف ویلفیئر سوسائٹی کویت نے بابائے قوم قائدِ اعظم محمد علی جناحؒ کی خدمات، جدوجہد، اور قیامِ پاکستان میں اُن کے کردار کو سراہا اور خراجِ تحسین پیش کیا. انہوں نے کہا کہ انصاف ویلفیئر سوسائٹی اپنی روایات کو برقرار رکھتے ہوئے اپنے قومی مشاہیر کی خدمات کے اعتراف میں پروگرام منعقد کروانے کا سلسلہ مستقبل میں جاری رکھے گی. اور اس کے ساتھ ساتھ کویت میں مقیم پاکستانی کمیونٹی کے مسائل کو نہ صرف اجاگر کرتی رہے گی بلکہ ان کے حل کے لئے ممکنہ کوششیں بھی کرتی رہے گی. انہوں نے کہا کہ ہم نے کوشش کرکے پی آئی اے کی پروازوں کی بندش کا مسئلہ پارلیمنٹ سے سینٹ تک پہنچایا جس کے نتیجے میں حالیہ ماہ میں پی آئی اے کی پرواز سیالکوٹ کے لئے بحال ہو چکی ہے. اور جلد مزید شہروں کے لئے بھی بحال ہو جائیں گی. انہوں نے کہا کہ ویزوں کی بندش کا مسئلہ ہماری اولین ترجیح ہے، اس کے علاوہ کویت میں وفات پا جانے والے پاکستانیوں کی مییتوں کی پاکستان فری روانگی کا مسئلہ، کویت میں مقیم پاکستانیوں کے خاندانوں کے لئے ہیلتھ کارڈز کا اجرا، کاروبار ی حلقے کے لئے پاکستان میں سرمایہ کاری کے لئے معاونت، کویت میں مقیم پاکستانیوں کے ساتھ پاکستان میں فراڈ، جائیدادوں کے مسائل وغیرہ حل شامل ہیں. انہوں نے کہا کہ اب پی ٹی آئی کی حکومت ہے اور ہم امید کرتے ہیں کہ چونکہ بیرونِ ممالک مقیم پاکستانی عمران خان صاحب کے دل بہت قریب ہیں اس لئے ان کے مسائل بھی بروقت حل کئے جائیں گے. انہوں نے وفاقی وزیر، اور سفیرِ پاکستان اور تمام احباب کا شکریہ بھی ادا کیا. سفیرِ پاکستان سید سجاد حیدر نے وفاقی وزیر، پیر امجد حسین، اور انصاف ویلفیئر سوسائٹی کویت کا عظیم الشان پروگرام کے انعقاد پر شکریہ ادا کیا اور مبارکباد پیش کی. انہوں نے قائدِ اعظمؒ کو ایک مثالی شخصیت قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں فخر ہے کہ ہمارے قائد ، قائدِ اعظم ہیں. جن کی قابلیت کی دنیا معترف ہے. انہوں نے مزید کہا کہ دیگر مسائل کے حل کے ساتھ ساتھ میری اولین ترجیح ویزوں کی بندش کے مسئلے کا حل ہے. یہ ایک بہت بڑا سماجی مسئلہ ہے. انہوں نے کہا کہ وہ جلد امیرِ کویت سے ملاقات کر رہے ہیں جس میں ویزوں کی بندش کے مسئلہ کا حل اولین ترجیح ہوگا.انہوں نے سفارت خانہ پاکستان کی جانب سے پاکستانی کمیونٹی کے لئے اپنے تعاون کی مکمل یقین دہانی کروائی. گیسٹ آف آنر اور وفاقی وزیر شہر یارخان آفریدی جب خطاب کے لئے تشریف لائیں تو ہال ایک مرتبہ پھر پاکستان زندہ باد کے نعروں سے گونج اٹھا اور دیر تک گونجتا رہا. وفاقی وزیر نے اپنی شعلہ بیانی، فصاحت وبلاغت ، وسعتِ خیال،اور جذبہ ء حب الوطنی سے سرشار خطاب سے حاضرینِ پروگرام کو اپنے سحر میں جکڑے رکھا. انہوں نے کہا آج دو قومی نظریہ کی مخالفت کرنے والے یہ کہنے پر مجبور ہیں کہ قائدِ اعظمؒ سچے تھے. انہوں نے کہا کہ آج ہم مسلمانوں کی حالت اس لئے ابتر ہے کہ ہم اپنے آباؤ واجداد کے رستے سے ہٹ گئے ہیں. ہم تن آسان ہو گئے ہیں. ہمارا مقصد پیسہ جمع کرنا ہو گیا ہے. رشتوں کا احساس ختم ہو گیا ہے. جس مقصد کے لئے پاکستان بنایا گیا تھا اور جو قائدِ اعظمؒ کا پاکستان کے لئے نظریہ تھا ہم نے گزشتہ بہتر برسوں میں ہر کام اس کے خلاف کیا ہے. لیکن اب عمران خان قائدِ اعظمؒ کی اسی سوچ، فلسفے، اور نظریے کی بات کرتے ہوئے کہتا ہے کہ ہم پاکستان کو ریاستِ مدینہ کا ماڈل بنائیں گے. ہم ملک کے پیسہ لوٹنے والوں کو نہیں چھوڑیں گے. ہم پاکستان کو حقیقی معنوں میں قائد کا پاکستان بنائیں گے. انہوں نے کہا آج ہمیں ففتھ جنریشن وار کا سامنا ہے . جس کے مقابلے کے لئے ہمیں ہر پاکستانی کے تعاون اور ساتھ کی ضرورت ہے. تاکہ اُن کو شکست دی جاسکے. انہوں نے کہا ان شاء اللہ مارچ تک ویزوں کا مسئلہ حل ہو جائے گا. اور 2023 تک کویت میں پاکستانیوں کی تعداد اڑھائی لاکھ تک پہنچ جائے گی. انہوں کویت میں مقیم تمام پاکستانی کمیونٹی اور پیر امجد حسین کی مہمان نوازی کا شکریہ ادا کیا. اور محمد ابراھیم، ناصرعباص، سید علی رضا نے ملی و قومی نغموں کی صورت قائدِ اعظمؒ کو خراجِ تحسین پیش کیا. مقررین میں نوجوان ادیب وکالم نگارمحمد فیصل نے آزادی کی نعمت اور قائد اعظمؒ کی شخصیت کے حوالے سے اظہارِ خیال فرمایا. پاکستانی کمیونٹی کی بزرگ شخصیت عبید الرحمن آرائیں نے قائدِ اعظمؒ کی شخصیت اور کردار پر پرمغز گفتگو فرماتے ہوئے کہا کہ عمران کا ویژن دراصل قائدِ اعظمؒ کا ویژن ہے. پروگرام کے آخری میں جمعہ خان آفریدی کی جانب سے شہریار خان آفریدی کو خصوصی پگڑی پہنائی گئی. اور پیر امجد حسین ، ملک تبسم جاوید،اور شہزاد الرحمن بٹ نے سفیرِ پاکستان اور وفاقی وزیر شہر یار خان آفریدی کو انصاف ویلفیئر سوسائٹی کویت کی جانب سے یادگاری شیلڈز پیش کیں. پیر امجد حسین نے ملک ِ پاکستانی سلامتی، خوشحالی، اور ترقی کی دعاؤں کے ساتھ پروگرام کا اختتام کیا. پروگرام کے اختتام کے بعد شہر یار خان آفریدی لوگوں میں گھل مل گئے اور ان کے ساتھ دیر تک سیلفیاں بنواتے رہے.


www.pakistanisinkuwait.com

Photo Album: https://www.facebook.com/pg/PakistanisInKuwait/photos/?tab=album&album_id=2676752679089697
full speach on youtube 

 

 

 

پاکستان ایمپلائمنٹ فورم کویت اپنی نوعیت کی ایک منفرد تنظیم ہے جو کویت میں ہموطنوں کو روزگار کے حصول میں معاونت اور طلبہ و طالبات کو ہائر ایجوکیشن کے لئے رہنمائی فراہم کرتی ہے اسی سلسلے میں گزشتہ دنوں پاکستان ایمپلائمنٹ فورم کویت اور بی آئی اے کے زیراہتمام طلبا اور طالبات کے لیے ہائرایجوکیشن میں رہنمائی کے لیے کیریئرکونسلنگ ورکشاپ کا انعقاد کیا گیا جس میں طلبہ اور ان کے والدین نے شرکت کی۔ ورکشاپ کا آغاز تلاوت قرآن حکیم سے ہوا جس کی سعادت محمد علی حسن حاصل کی اس کے بعد پاکستان ایمپلائمنٹ فورم کویت کے صدر محمد عرفان عادل نے ورکشاپ کی غرض و غایت اور پاکستان ایمپلائمنٹ فورم کویت کے بارے میں تعارف پیش کیا۔ بی ای اے کے اکیڈمک ڈائریکٹر عاطف سہیل اسلم نے ہائر ایجوکیشن کے مواقع پر ایک تفصیلا پریزنٹیشن پیش کی طلبہ اور والدین نے ورکشاپ میں گہری دلچسپی کا اظہار کیا اور ہائر ایجوکیشن کے لیے مختلف سوالات اور معلومات حاصل کیں ورکشاپ کے اختتام پر عاطف سہیل اسلم اور محمد عرفان عادل نے تمام طلباء اور والدین کا شکریہ ادا کیا ۔ اس موقع پر والدین اور شرکاء نے پاکستان ایمپلائمنٹ فورم کویت اور بی آئی اے کو اس بہترین ورکشاپ کے انعقاد پر خراج تحسین پیش کیا اور کہا کہ اس طرح کی ورکشاپس کی یہاں پر اشد ضرورت ہے ہم امید کرتے ہیں کہ پاکستان ایمپلائمنٹ فورم کویت اور بی ائی اے آئندہ بھی اس طرح کی ورکشاپ کا انعقاد کرتے رہیں گے ورکشاپ میں خلیل احمد راجپوت، شکیل مرتضی، انجینئر سید جنید احمد کے علاوہ دیگر مہمانان نے شرکت کی۔ آخر میں تمام حاضرین کے لیے ری فریش منٹ کا اہتمام کیا گیا اس طرح یہ ایک اہم ورکشاپ اپنے اختتام کو پہنچی۔

Pakistani Blood Donors Association (PAK Donors) has been serving humanity since 2011 for the noble cause of blood donation. On 22nd November 2019, 12th Blood Donation camp was held at Central Blood Bank, Jabriya under patronage of Embassy of Pakistan. The event was organized with an aim to extend support to the Central Blood Bank to cater the need of blood supply in Kuwait. The Pakistani community in Kuwait expressed their solidarity and gratitude with the Kuwaiti society by supporting the noble cause of blood donation while strengthening brotherly ties between both nations.

The event was witnessed by an overwhelming attendance of above 300 donors. People from different communities participated. While the presence of Pakistanis in majority symbolized their love for their second home.

Mr. Amer Hamid – Founder Pakistani Blood Donors Association especially came from Pakistan to attend the event & Mr. Naveed Shehzad, Mr. Faraz Mustaq Founder Members were also Present in the event.  Mr. Amer Hamid & Mr. Ehsanulhaq welcomed Chargé d'affaires, Embassy of Pakistan Mr. Ashar Shahzad who visited the blood bank and shared his words that such activities help to extend the positive image of Pakistani community in Kuwait. He congratulated PAK Donors on organizing a successful event.

A Special visit was paid by Dr. Reem Al Salem, Specialist Hematologist-Head of Al Razi Hospital laboratories, Mrs. Shaista Zahid, Head Coordinator women wing PAK Donors and Dr Shujaudeen Khokhar, President of Society of Pakistani Doctors in Kuwait escorted her around the various sections of camp. She appreciated the efforts of the organization in spreading awareness about the blood donation.

Mr. Ehsanulhaq, Co-Founder PAK Donors & Mr. Irfan Saeed, Chief Adviser Pak Donors warmly welcomed the dignitaries and worthy donors. Mr. Ehsan’s guidance has been a beacon for the entire team throughout the years. His devotion to this cause inspired many people to be a part of this team.

Hafiz Muhammad Shabbir, Peer Ajmad Hussian, Mr. Rana Ijaz Sohail, Hafiz Haeez ur Rehman, Mr. Majid Ali Chaudhary, Mr Abdullah Abbasi, Mian Arshad Mohamed, Dr. Jehanzeb Usman, Mr. Sheikh Bashir & Syed Babar Prince graced the occasion with their presence & their presence at this event proved their commitment and devotion in supporting the organization. They all appreciated the untiring efforts of team members and volunteers and extended their support in future events.

Mr. Arif Butt, Chairman PAK Donors & Mr. Nouman Aslam Ghuman, Head Coordinator PAK Donors & ALL TEAM (Mr. Adnan Javed, Mr. Altaf Hussian, Mr. Hassan Abid, Mr. Osama Imtiaz, Mr. Shahbaz Ahmed) aimed to continue their services for this humanitarian cause, He Extended his gratitude to the Embassy of Pakistan, Kuwait Central Blood Bank, Cause Partners (IEC) YW, Sponsors, Dignitaries, Donors, Volunteers, Media Partners and everyone who supported this cause. He thanked and appreciated all his team members for their hard work and effort.

The PAK Donors aspire to inspire other communities to spread awareness of blood donation in Kuwait.

Photo Album: https://www.facebook.com/pg/PakistanisInKuwait/photos/?tab=album&album_id=2571853639579602

 

 
 
 پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کویت کے زیر اہتمام سیرت النبی صلی اللہ علیہ وسلم کانفرنس کا انعقاد کویت کے طول و عرض سے سینکڑوں خواتین کی شرکت کویت میں پاکستانی خواتین کا سب سے بڑا ، منظم اور عظیم الشان اسلامی تربیتی پروگرام پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کی زیر نگرانی تربیت حاصل کرنے والی طالبات نے بہترین انداز میں تلاوت، حمد و نعت، نقابت اور خطابت کے حوالے سے اپنی صلاحیتوں کا شاندار مظاہرہ کرکے حاضرین کے دل جیت لئے پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کویت کی صدر مسز روبیلہ غزل نے " سیرت طیبہ اور اصلاح احوال کے موضوع پر فکر انگیز خطاب کیا کانفرنس کی مہمان خصوصی مس حنا سلیم تهیں پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کویت کے زیر اہتمام ایک عظیم الشان سیرت النبی صلی اللہ علیہ وسلم کانفرنس برائے خواتین کا انعقاد کیا مورخہ 9 نومبر بروز ھفتہ کو ایک مقامی هوٹل کے وسیع و عریض هال میں کیا گیا جس میں کویت کے طول و عرض سے کثیر تعداد میں خواتین نے شرکت کی کہ ھوٹل کا وسیع وعریض ھال اپنی تنگ دامانی کا منظر پیش کرنے لگا۔ یہ کویت میں بلا شبہ پاکستانی خواتین کا سب سے بڑا ، منظم اور عظیم الشان اسلامی تربیتی پروگرام تھا کانفرنس کی صدارت پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کویت کی صدر مسز روبیلہ غزل نے کی جبکہ مہمان خصوصی مس حنا سلیم تهیں. کانفرنس کا باقاعدہ آغاز تلاوت قرآن پاک سے ھوا جسکی سعادت فاطمہ نواز اور عائشہ عرفان نے حاصل کی. جبکہ کمپئرنگ کے فرائض زهرا حنیف اور فائزہ صدیقی نے انجام بحسن و خوبی دیئے. هدیہ نعت ثوبیہ عاصم، زھرہ حنیف، مسز راحت اقبال،سعدیہ خان،نادیہ خان،نائلہ مرزا اور عائشہ عرفان جبکہ کلام اقبال مریم منصور نے پیش کیا.اسلامی موضوعات پر انگلش میں بہترین تقاریر حفصہ ستار اور سعدیہ خان نے پیش کیں. ایسوسی ایشن کی جنرل سیکرٹری فائزہ صدیقی نے اقبال اور محبت رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے موضوع پر اظہار خیال کیا۔ حولی پاکستان انگلش سکول کی طالبات نے عربی میں خوبصورت نعت پیش کی پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کی زیر نگرانی تربیت حاصل کرنے والی طالبات نے بہترین انداز میں تلاوت ، حمد و نعت، نقابت اور خطابت کے حوالے سے اپنی صلاحیتوں کا شاندار مظاہرہ کرکے حاضرین کے دل جیت لئے. اس کانفرنس کی مہمان خصوصی مسز حنا سلیم نے کہا کہ مجھے اس عظیم الشان سیرت النبی صلی اللہ علیہ وسلم کانفرنس میں شرکت پر بہت خوشی هو رھی ھے انتہائی منظم اور پھر کثیر تعداد میں خواتین کی شرکت اور مزید یہ کہ پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کویت کی زیر نگرانی تربیت حاصل کرنے والی طالبات کا بہترین انداز میں تلاوت، حمد و نعت، نقابت اور خطابت پیش کرنا انتہائی شاندار اور قابل ستائش ھے. اور میں پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کویت کی کامیابی کے لئے دعا گو هوں اور انتہائی کامیاب اور منظم سیرت النبی کانفرنس کے انعقاد پر مبارکباد پیش کرتی ھوں۔ پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کویت کی صدر مسز روبیلہ غزل نے " سیرت طیبہ اور اصلاح احوال" کے موضوع پر فکر انگیز اور موثر خطاب کیا انہوں نے کہا کہ آج کی عورت بحیثیت ماں، بہن، بیٹی اور بیوی کے اپنی ذمہ داریوں کو احسن طریقے سے ادا نہیں کر رہی جسکی بنیادی وجہ اسلامی تعلیمات سے دوری ھے. عورت دنیاوی تعلیم کے ساتھ ساتھ اگر دینی تعلیم کی بھی حامل ھو تو وہ بہتر انداز میں اپنے بچوں کی تربیت کر سکتی ھے ایک پڑھی لکھی اور دیندار ماں آئندہ آنے والی نسلوں کی اسلامی خطوط پر بہترین تربیت کر سکتی ھے انہوں نے کہا کہ پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کویت کا مقصد خواتین کی دینی تعلیم و تربیت اور فلاح و بہبود ھے تاکہ وہ معاشرے کی ترقی میں بهرپور کردار ادا کر سکیں. انہوں نے تمام شرکاء، میڈیا نمائندگان، پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کویت کی تمام ٹیم بالخصوص کانفرنس کوآرڈینیٹر نائلہ مرزا کی کاوشوں کو خراج تحسین پیش کیا، اور تمام مہمانوں کا کانفرنس میں شرکت کرنے پر شکریہ ادا کیا آخر میں درود و سلام اور دعا کی گئی اور تمام ٹیم اور طالبات میں تعریفی سرٹیفکیٹس تقسیم کیے گئے اور کانفرنس کے انعقاد میں نمایاں کردار ادا کرنے والی خواتین میں تعریفی شیلڈز پیش کی گئیں اور قرعہ اندازی کے ذریعے سامعین میں انعامات تقسیم کیے گئے اس طرح یہ یادگار کانفرنس اپنے اختتام کو
پہنچی.
 
 
 

 

Click for Photo Album https://www.facebook.com/pg/PakistanisInKuwait/photos/?tab=album&album_id=2541715009260132

Click to Watch the full event on youtube 

 

 

اس پرچم کے سائے تلے ہم ایک ہیں
پاکستان سے آنے والی سرکردہ حکومتی شخصیات چوہدری وسیم اور ندیم عباس بارا کے اعزاز میں یادگار تقریب
اوورسیز پاکستانیوں کے جائیدادوں کے مقدمات 6 ماہ میں نمٹائے جائینگے
وائس چیئرمین اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب کا خطاب
قسم کھا کر کہتا ہوں کہ پاکستان میں تبدیلی آئے گی اور آ کر رہے گی:حافظ محمد شبیر
عمران خان دنیا بھر میں گرین پاسپورٹ کی عزت کیلئے کام کر رہے ہیں: ملک ندیم عباس بارا
پاکستان بزنس سنٹر کویت کے زیر اہتمام کویت کے دورہ پر آنے والی سرکردہ حکومتی شخصیات چوہدری وسیم اختر وائس چیئرمین اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب اور ملک ندیم عباس بارا کے اعزاز میں ایک یادگار تقریب کاانعقاد کیا گیا جس میں کمیونٹی کے ہر طبقہ فکر سے تعلق رکھنے والی شخصیات نے شرکت کی، اسی مناسبت سے پروگرام کا نام ،،اس پرچم کے سائے تلے ہم ایک ہیں ،، رکھا گیا۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چوہدری وسیم اختر نے کہا کہ وہ پاکستان بزنس سنٹر کے ڈائریکٹر جنرل حافظ محمد شبیر کے شکر گذار ہیں جنہوں نے انہیں کویت آنے اور پاکستانی کمیونٹی سے رابطے کا موقعہ فراہم کیا۔
آپ کو اپنے کیسز ڈیل کرنے کیلئے وطن نہیں جانا پڑے گا ،ہم آپ کے نمائندے کے طور پر آپ کے مقدمات لریں گے۔آپ کویت میں پاکستانی مصنوعات کو فروغ دینے کیلئے دن رات کام کر رہے ہیں۔کمیونٹی مسائل پر عزت مآب سفیر پاکستان سے بات ہوئی ہے،جیلوں میں بند پاکستانیوں کے بارے میں بھی رپورٹ حاصل کر لی ہے،جرائم کے حوالہ سے دیگر کمیونٹیز کے مقابلہ میں پاکستانیوں کا تناسب بہت کم ہے،سب سے بڑا مسئلہ کویت پاکستان روٹ پر پی أئی اے پروازوں کی بحالی کا ہے ،وہ اس مسئلہ کو ہر فورم پر اتھائیں گے ،وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور وزیراعظم عمران خان سے بھی اس بارے میں بات کریں گے ،کوشش کریں گے کہ جلد از جلد یہ مسئلہ حل ہو جائے۔
قبل ازیں تقریب کا آغاز تلاوت قرآن مجید سے ہوا جس کی سعادت حافظ عامر شبیر نے حاصل کی،کمپئرنگ کے فرائض محمد افضل شافی نے انتہائی خوبصورتی سے انجام دئیے،مقررین کو اسٹیج پر بلوانے سے پہلے وہ اشعار کا انتخاب اتنی مہارت سے کرتے ہیں کہ محسوس ہوتا ہے کہ وہ اشعار ان کے لئے ہی کہے گئے ہیں،انہوں نے ھدیہ عقیدت پیش کرنے کیلئے ووپ میڈیا کے سی ای او طارق اقبال کو اسٹیج پر آنے کی دعوت دی،ہر دل میں ہے نام محمد صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم پیش کر کے سماں باندھ دیا۔کویت اور پاکستان کے قومی ترانے ہیش کئے گئے جن کے احترام میں تمام شرکاء خاموش اور باادب کھڑے ہو گئے۔
کویت میں انصاف ویلفیئر سوسائٹی کے بانی صدر ارشد نعیم چوہدری تقریب کے پہلے مقرر تھے،انہوں نے کہا کہ وہ چوہدری وسیم اختر اور ملک ندیم عباس بارا کو کویت میں خوش آمدید کہتے ہیں، انہوں نے 2006 میں کویت میں آم کا پودا لگایا تھا جو اب ایک تناور درخت بن چکا ہے،اللہ تعالیٰ کا کرم ہے کہ ہم کویت میں رہ کر پاکستان کی خدمت کر رہے ہیں۔یو کے انٹر نیشنل کے سی ای او محمد جمیل نے خطاب کرتے ہوئے تقریب کے میزبان اور ڈائریکٹر جنرل پاکستان بزنس سنٹر حافظ محمد شبیر کو زبردست خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ وہ کویت میں پاکستانی مصنوعات کے فروغ کے لیے دن رات کام کر رہے ہیں،کمیونٹی کی ممتاز کاروباری وسماجی شخصیت شمشاد احمد خان تنولی،سینئر رہنما انصاف ویلفیئر سوسائٹی کویت نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنے مستقبل کے لیڈر حافظ محمد شبیر کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں جنہوں نے مختصر وقت میں اتنا شاندار پروگرام ترتیب دیا ،وہ چوہدری وسیم اختر اور ملک ندیم عباس کو کویت میں خوش آمدید کہتے ہیں، حافظ محمد شبیر کمیونٹی کی خدمت کیلئے دن رات محنت کر رہے ہیں، انہوں نے پی آئی اے پروازوں کی بحالی کیلئے ہماری آواز پارلمینٹ ہاؤس اور حکام بالا تک پہنچائی ،انہیں امید ہے کہ وہ پی آئی اے کی پروازیں بحال کرانے میں کامیاب ہو جائیں گے۔ماجد علی چوہدری ممبر بورڈ آف گورنرز اوپی ایف نے خطاب کرتے ہوئے چوہدری وسیم اختر اور ملک ندیم عباس بارا کا شکریہ ادا کہ وہ کویت میں مقیم پاکستانی کمیونٹی کے مسائل سے آگہی کیلئے تشریف لائے۔وسیم اختر کے پاس بڑے ایماندار لوگوں کی ٹیم موجود ہے جن میں ڈی آئی جی ناصر مختار بھی شامل ہیں جنہوں نے ایف ایس سی تک تعلیم کویت سے حاصل کی ،انہوں نے یقین دہائی کرائی ہے کہ اب اوورسیز پاکستانیز کے مقدمات کا فیصلہ 6 ماہ میں ہو گا۔وسیم چوہدری اور انہوں نے لاہور میں ایک پی کالج سے تعلیم حاصل کی، وہ ان سے ایک سال سینئر تھے،حافظ محمد شبیر صاحب کو وہ پچھلے بیس سال سے جانتے ہیں ،وہ کویت میں کمیونٹی کی خدمت اور پاکستانی مصنوعات کے فروغ کیلئے دن رات کام کر رہے ہیں۔ محمد عارف بٹ صدر پاکستان بزنس کونسل نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ معزز مہمانان چوہدری وسیم اختر اور ملک ندیم عباس بارا کو کویت میں خوش آمدید کہتے ہیں،آج سفارت خانہ میں معزز مہمانان کی عزت مآب سفیر پاکستان غلام دستگیر سے ملاقات ہوئی،اس موقعہ پر انہیں کمیونٹی مسائل سے آگاہ کیا گیا ،انہوں نے ان مسائل کے حل کی یقین دیانی کرائی۔ کویت میں مقیم پاکستانی کمیونٹی ایک عظیم کمیونٹی ہے ،ہم اس پرچم کے سائے تلے ایک ہیں۔
پاکستان سے آنے والے معزز مہمان ملک ندیم عباس بارا رکن پنجاب اسمبلی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہ ان کی خوش قسمتی ہے کہ وہ کویت میں رہنے والے بھائیوں اور بزرگوں کے درمیان ہیں،آپ لوگ محنت مزدوری کر کے پیسے پاکستان بھیجتے ہیں ،کچھ لوگ چالیس پچاس سال سے کویت میں محنت کر رہے ہیں مگر افسوس گذشتہ حکومتوں انہیں سہولتیں فراہم نہیں کیں مگر وزیراعظم عمران خان نے ہمیشہ اوورسیز پاکستانیوں کیلئے بات کی،انہوں نے پاکستانی تارکین وطن کیلئے الگ ادارہ بنایا،بیرونی ممالک کی جیلوں سے قیدی چھڑوانے۔وہ دنیا بھر میں مقیم پاکستانیوں کی عزت بحال کرانے کیلئے کام کر رہے ہیں،وہ وقت دور نہیں جب دنیا بھر میں گرین پاسپورٹ کی عزت ہوگی ،وہ حافظ محمد شبیر کا شکریہ ادا کرتے ہیں جنہوں نے کویت مدعو کیا اور پاکستانی کمیونٹی سے ملاقات کا موقعہ فراہم کیا ۔
تقریب کے میزبان حافظ محمد شبیر نے اپنے اختتامی کلمات میں کہا کہ وہ معزز مہمانان چوہدری وسیم اختر اور ملک ندیم عباس بارا کا شکریہ ادا کرتے ہیں جو ان کی دعوت پر کویت تشریف لائے اور کمیونٹی کے مسائل سنے، انہیں یاد ہے انہوں نے اسی ہال میں قسم کھائی تھی کہ عمران خان وہ لیڈر ہے جسے خریدا نہیں جاسکتا،وہ آج پھر قسم کھا کر کہتے ہیں کہ تبدیلی آئے گی اور آ کر رہے گی، ہم سب نے مل کر تبدیلی لانی ہے ،انہوں نے علامہ اقبال کا مشہور شعر پڑھا
تندی باد مخالف سے نہ گھبرا اے عقاب
یہ تو چلتی ہے تجھے اونچا اڑانے کیلئے
انہوں نے وعدہ کیا تھا کہ حکومتی شخصیات کو ان کے سامنے لائیں گے،آج چوہدری وسیم اختر وائس چیئرمین اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب کو کمیونٹی کے سامنے پیش کرکے یہ وعدہ پورا کردیا ہے ،وہ چوہدری وسیم اختر اور ملک ندیم عباس کا شکریہ ادا کرتے ہیں جنہوں نے کویت میں مقیم پاکستانی کمیونٹی کے مسائل بڑے غور سے سنے اور ان کے حل کی یقین دہائی کرائی ،وہ خود بھی ان سے رابطے میں رہیں گے ،انشاء اللہ ان مسائل کو حل کرا کے رہیں گے۔ آخر میں ملک ندیم عباس اور چوہدری وسیم اختر کو یادگاری
شیلڈز پیش کی گئیں۔ حافظ محمد شبیر کی دعا کے ساتھ یہ تقریب اختتام کو پہنچی ،شرکاء کیلئے پرتکلف عشائیہ کا بھی اہتمام کیا گیا تھا۔
 
 
 
4.png

login with social account

 
 

Images of Kids

Events Gallery

Online Health Insurance System

 Sate of Kuwait

Go to top