لاہور (خصوصی رپورٹر+ نامہ نگار+ لیڈی رپورٹر) سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف کل اتوار کو موٹروے کے ذریعے لاہور پہنچیں گے لاہور میں بابو صابو انٹرچینج پر ان کا استقبال مسلم لیگ (ن) کے رہنما میاں حمزہ شہباز اور خواجہ سعد رفیق کریں گے جبکہ پنجاب ہاؤس اسلام آباد سے میاں نواز شریف لاہور کیلئے روانہ ہوں گے تو راولپنڈی ڈویژن سمیت انتظامی امور کے انچارج چودھری نثار ان کے ہمراہ ہوں گے۔ مسلم لیگ (ن) کے قائد اسلام آباد سے موٹروے انٹرچینج پر پہنچیں گے تو وہاں اسلام آباد اور راولپنڈی کے ممبران قومی و صوبائی اسمبلی اپنے ساتھیوں کے ہمراہ ان کا استقبال کریں گے اور ان کے ساتھ قافلے کی صورت میں روانہ ہوں گے۔ ذمہ دار ذرائع نے بتایا ہے کہ موٹروے پر مختلف انٹرچینج آئیں گے جہاں ملحقہ شہروں کے ممبران قومی وصوبائی اسمبلی اور پارٹی عہدیداران اپنے قائد کو خوش آمدید کہیں گے۔ شیخوپورہ انٹرچینج پر ارکان قومی اسمبلی میاں جاوید لطیف، عرفان ڈوگر، چودھری سجاد حیدر گجر، فیضان خالد جبکہ کوٹ عبدالمالک انٹرچینج پر وفاقی وزیر رانا تنویر حسین، رکن قومی اسمبلی رانا افضال حسین، ارکان صوبائی اسمبلی عارف سندھیلہ، پیر اشرف رسول ساتھیوں کے ہمراہ نواز شریف کو خوش آمدید کہیں گے۔ میاں نواز شریف کے استقبال کیلئے تیاریاں عروج پر پہنچ گئی ہیں، گزشتہ روز مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنما میاں حمزہ شہباز نے لاہور کے مسلم لیگی عہدیداروں، لارڈ میئر، ڈپٹی میئرز، یونین کونسلوں کے چیئرمینوں وائس چئرمینوں اور سینئر کارکنوں کے ایک اجلاس کی صدارت کی جس میں استقبال کی تیاریوں کا جائزہ لیا گیا۔ بابو صابو اور لیڈی ولنگڈن ہسپتال سے بھاٹی چوک تک سٹیج لگانے کیلئے جگہوں کا انتخاب کر لیا گیا اور آج ہفتہ کو استقبالیہ بینرز، فلیکس اور سٹیج لگانے کا کام پایہ تکمیل کو پہنچ جائے گا۔ میاں نواز شریف کے استقبال کیلئے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 120 کے علاقوں کو چنا گیا ہے۔ وفاقی وزیر خواجہ سعد رفیق نے بتایا کہ عوام اپنے لیڈر کے استقبال کیلئے امڈ آئیں گے انہوں نے کہا کہ اسلام آباد سے لاہور تک میاں نواز شریف کے خطاب کیلئے کوئی جگہ طے نہیں کی گئی ان کا کہنا تھا کہ ان کی ڈیوٹی میاں حمزہ شہباز کے ساتھ لاہور میں نواز شریف کا استقبال کرنا ہے تاہم یہ ممکن نہیں کہ میں اپنے قائد کے ساتھ اسلام آباد سے روانگی میں بھی ان کے ساتھ ہوں۔ دریں اثناء میاں نواز شریف کے پولیٹیکل سیکرٹری ڈاکٹر آصف کرمانی نے کہا ہے کہ سابق وزیراعظم عوام کے دلوں میں بستے ہیں اور عوام اپنے محبوب قائد کا بھرپور استقبال کریں گے۔ نواز شریف کی آمد کے موقع پر سکیورٹی کیلئے 8 ہزار سے زائد پولیس اہلکار تعینات کئے جائیں گے۔ ذرائع کے مطابق ایلیٹ فورس کی 50 ٹیمیں بھی ان کے روٹ پر تعینات ہوں گی جبکہ روٹ کی فضائی نگرانی بھی جائے گی۔ علاوہ ازیں مسلم لیگ ن شعبہ خواتین لاہور کے زیراہتمام سابق وزیراعظم کی لاہور آمد کے استقبال کی تیاریاںعروج پرپہنچ گئیں۔ صدر شائستہ پرویز ملک اور جنرل سیکرٹری کنول لیاقت نے بابو صابو سے داتا دربار تک کے چھ استقبالیہ پوائنٹس پر خواتین عہدیداران اور کارکنان کی ڈیوٹیاں متعین کردیں۔ استقبالیہ پوائنٹس پرخواتین ڈسٹرکٹ ممبرزکے علاوہ خواتین ارکان اسمبلی بھی موجود ہوںگی۔ بابوصابو پر حلقہ این اے 121, 126, 127اور128کی زونل صدوراورسیکرٹریزکارکنان کے ہمراہ ، گلشن راوی چوک پر حلقہ این اے 122، آؤٹ فال روڈ پرحلقہ این اے 123, 124، نیازی چوک 125, 118، آزادی چوک 130اور داتا دربار استقبالیہ پوائنٹ پر119, 120اور129کی خواتین عہدیداران اورکارکنان موجود ہوں گی۔ معلوم ہوا ہے کہ خواتین نے استقبال کیلئے خصوصی ملبوسات بھی تیارکروالئے ہیں۔